Report on Question No.1005

سوال نمبر1005

 

                                                                                                 صوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ خیبرپختونخوا

                                                                                                      رپورٹ ذیلی کمیٹی  مجلس قائمہ نمبر21  برائےبہبود آبادی

میں چیئر پرسن  ذیلی کمیٹی مجلس قائمہ نمبر21برائے بہبود آبادی  جناب خوشدل خان ایڈوکیٹ، ایم پی اے/ ڈپٹی سپیکرصوبائ اسمبلی کی طرف سے  حوالہ کردہ سوال نمبر1005 پر ذیلی کمیٹی کی جانب سے   رپورٹ پیش کرنے کا  صوبائی اسمبلی  کی طرف سے  حوالہ کردہ  سوال  نمبر1005 پر ذیلی کمیٹی کی جانب سے رپورٹ پیش کرنے کا شرفحاصل کرتی ہوں۔

-2                        کمیٹی نے اپنے منعقدہ اجلاس مورخہ 26 فروری 2011 میں مذکورہ بالا سوال  پر غور و خوض کیا جس میں درجہ ذیل اراکین کمیٹی  نے شرکت کی۔

                                                -1                        محترمہ مہر سلطانہ صاحبہ،                                                               ایم پی اے

                                                -2                        محترمہ عظمی خان صاحبہ،                                                               ایم پی اے

-3                             جناب  خوشدل خان صاحب، ڈپٹی سپیکر نے بطور محرک  اجلاس میں  شرکت کی۔

-4                                    مندرجہ ذیل افسران نے  اپنے  محکمہ کی نمائندگی کی۔                                                                                                                                                                                                        -1                                  جناب نور نواز خان صاحب،                                       ڈائریکٹر جنرل بہبود آبادی

                                                -2                        جناب  محمد علیم صاحب،                     ڈپٹی ڈائریکٹر

-5                         جناب مسعود الحسن صاحب ،سیکشن آفیسر ،محکمہ قانون و پارلیمانی امور وانسانی حقوق  نے ماہرانہ رائے کے لئے اجلاس میں شرکت کی ۔

-6   جناب خوشدل خان صاحب، ڈپٹی سپیکر محرک نے کمیٹی کو بتایا کہ محکمہ بہبود آبادی میں اسمبلی کے فلور پر انکے سوال نمبر1005 کے جواب میں جو دستاویزات پیش کیں انکے مطابق ابتداء میں مردانہ و زنانہ  فیملی ویلفیئر اسسٹنٹ کی آسامیوں کے لئے  تعلیمی معیار ایف اے  ایف اے سی تھا جبکہ بعد میں میٹرک مقررکیا جوکہ قریں انصاف نہیں ہے کیونکہ ملک میں خوانگی کی شرح روز بروز بڑھ رہی ہے اسکے برعکس محکمہ نے کم تعلیمی معیار مقرر کیا جس پر نظرثانی کی ضرورت ہے تاکہ اعلی تعلیم یافتہ لوگوں کی حوصلہ افزائی اور معاشرے میں زیادہ تعلیم حاصل کرنے کے رجحان کو اجاگر کیا جاسکے۔

-7       انہوں نے مزید بتایا کہ  صوبہ میں بعض مخصوص  اضلاع میں شرح خواندگی کی کمی کے باعث کم تعلیمی معیار رکھنے پر غور کیا جاسکتا ہے۔

  -8      جناب نورنواز خان ڈائریکٹر جنرل محکمہ بہبود آبادی نے کمیٹی  کو بتایا کہ  دیگر صوبوں اور مرکز میں مذکورہ آسامیوں کے لئے تعلیمی معیار میٹرک ہے اور مذکورہ تعلیمی معیار کو حیبر پحتونحوا کی حکومت  نےبهی اپنایا اسی پالیسی کے تحت اپنی اسی پالیسی کو مجلس عمل کی حکومت اور نگران حکومت نے بھی سراہا ت

کمیٹی نے  تفصیل اور سیر حاصل بحث کے بعد مندرجہ ذیل سفارش کی منظوری دے دی۔

-9   کہ محکمہ  بہبود آبادی اپنے قوانین میں ترمیم کرکے  فیملی ویلفیئر اسسٹنٹ(زانانہ و مردانہ) کے لئے تعلیمی معیار میٹرک کی بجائے ایف اے / ایف اے سی کیا جائے اور پسماندہ علاقوں کے تعلیمی معیارکےمطابق وہاں پر کم شرح خواندگی کی  بناء پر میٹرک رکھا جائے۔

10۔                       لہذا رپورٹ بغرض منظوری مجلس قائمہ کو پیش کی جاتی ہے۔

                                                                                                                                                                                                                                                                                                                                                                                                  چیئر پرسن

                                                                                                                                                                        ذیلی کمیٹی مجلس قائمہ نمبر21برائے بہبود آبادی